1. ماضی  سے متعلق  نظریہ سازی

اس ماڈیول کی ابتداء میں ہم انسانی ثقافتوں میں موجود روز تخلیق اور روز آخرت سے متعلق مختلف نظریات و عقائد کا جائزہ لیں گے۔ ابراہیمی مذاہب (یہودیت، عیسائیت، اور اسلام) میں  تخلیق  اور آخرت کے حوالے سے موجود نظریہ ان  ہی متعدد نظریات میں سے ایک ہے۔ ہم کیوں مانتے ہیں کہ ایک نظریہ درست ہے اور دوسرا نہیں؟ اسلامی علمی روایت  نے اس طرح کے سوالات پر توجہ دی  ، اور یہ اصول قائم کیا کہ عقل ، علم کے مطالعے اور استدلال کے لئے کلیدی حیثیت رکھتی ہے۔

 

مندرجہ ذیل حصے طلباء کو علمیات (علم سے متعلق نظریات کا مطالعہ) اور تاریخ کے علم سے متعارف کراتے ہیں۔ ایک ہی واقعے سے متعلق مختلف روایات کے ذریعے تاریخ کا تعارف پیش کیا گیا ہے اور اس سے پیدا ہونے والی تکثیریت  سے نمٹنے کے لئے اسلامی فکری تاریخ میں کی جانے والی کلامی کوششوں کو مثالوں کے ذریعے بیان کیا گیا ہے۔ یہاں ہمیں علم کلام میں عقل کے کردار اور اہمیت کا اندازہ ہوتا ہے۔ اس ماڈیول میں دو اہم سوالوں کو اٹھایا گیا ہے:

۱۔     اگر  علم الہیات یا کلام کو وحی کی مدد کے بغیر محض عقل